حبیب خدا کا نظارہ کروں میں


حبیب خدا کا نظارہ کروں میں دل و جان ان پر نثارا کروں میں

مجھے اپنی رحمت سے تو اپنا کر دے سوا تیرے سب سے کنارہ کروں میں

میں کیوں غیر کی ٹھوکریں کھانے جاؤں تیرے در سے اپنا گزارہ کروں میں

تیرے نام پر سر کو قربان کر کے تیرے سر سے صدقہ اتارا کروں میں

یہ اک جان کیا ہے اگر ہوں کروڑوں تیرے نام پر سب کو وارا کروں میں

دم واپسی تک تیرے گیت گاؤں محمدﷺ محمد ﷺپکارا کروں میں

میرا دین وایماں فرشتے جو پوچھیں تمھاری ہی جانب اشارہ کروں میں

خدا ایسی قوت دے میرے قلم میں کہ بد مذہبوں کو سدھارا کروں میں

خدا خیر سے لائے وہ دن بھی نوریؔ مدینے کی گلیاں بہارا کروں میں

image_pdf⇒ ⇒ Download PDF Format ⇐ ⇐image_print⇒ ⇒ Print Naat Lyrics ⇐ ⇐

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

حبیب خدا کا نظارہ کروں میں

error: Content is protected !!