حُسن سارے کا سارا مدینے میں ہے

Lyrics to ‘حُسن سارے کا سارا مدینے میں ہے’:

نعت
حُسن سارے کا سارا مدینے میں ہے
ربِ اعلیٰ کا پیارا مدینے میں ہے

غم کے مارو چلو سوئے طیبہ چلو
غمزدوں کا سہارا مدینے میں ہے

جنتوں کے طلبگارو تم بھی سنو
جنتوں کا نظارا مدینے میں ہے

پوجنے والو شمس و قمر جان لو
دو جہاں کا اجالا مدینے میں ہے

دور رہ کر مدینے سے کیسے جیئیں
کملی والا ہمارا مدینے میں ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!