مدینے کا شاہ سب جہانوں کا مالک

Lyrics to ‘مدینے کا شاہ سب جہانوں کا مالک’:

نعت
مدینے کا شاہ سب جہانوں کا مالک
وہ رحمتِ حق کے خزانوں کا مالک

عرش کا فرش کا زمیں کا فلک کا
وہ سارے مکاں لامکانوں کا مالک

زمانوں میں پنہاں ہے ساری خدائی
میرا کملی والا زمانوں کا مالک

خلیلِ خدا ہوں یا روحُ الامیں ہوں
وہ دونوں جہاں کے اماموں کا مالک

نہیں کچھ بھی اسکی قلمرو سے باہر
وہ سب کائناتوں کی جانوں کا مالک

کوئی بات اس سے ہو پوشیدہ کیونکر
جو ہر دل کی خفتہ اذانوں کا مالک

ہو تعریف کیسے کما حَقُہٗ
جو ہو عرش و کرسی کی شانوں کا مالک

زمیں آسمانوں کا خالق خدا ہے
محؐمد زمیں آسمانوں کا مالک

منافق ہے دل گر عقیدہ نہیں ہے
ہے میرا نبی حق کی شانوں کا مالک

کسی بھی مکر سے وہ غافل نہیں ہے
وہ سب ماکروں کے بہانوں کا مالک

کروں کیا میں محبؔوب مدح سرائی
وہ سب بازباں بے زبانوں کا مالک

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!