میں گدائے دیارِ نبی ہوں پوچھیئے میرے دامن میں کیا ہے

میں گدائے دیارِ نبیﷺ ہوں پوچھیئے میرے دامن میں کیا ہے
مجھ کو نسبت ہے آلِ نبیﷺ سے ہاتھ میں دامنِ مصطفیﷺ ہے

میری پلکوں پے روشن ستارے دے رہے ہیں گواہی یہ سارے
جھانک کر میرے دل میں تو دیکھو مصطفیﷺ مصطفیﷺ کی صدا ہے

میرے مولا تو مالک ہے میرا سچا خالق ہے رازق ہے میرا
اس لیئے میں تجھے مانتا ہوں تو میرے مصطفی ﷺکا خدا ہے

جب بھی بچھڑا کرے مصطفی ﷺسے ہو بیاں کیسے لفظوں کا منظر
آگیا ہوں مدینے سے لیکن دل وہیں کا وہیں رہ گیا ہے

قدسیوں سے فلک نے جو پوچھا کیوں زمیں آج دلہن بنی ہے
قدسیوں نے کہا کے زمیں پر آج پھر محفلِ مصطفی ﷺہے